Home / ہمارا شہر / اسلام آباد / ججز کیخلاف ریفرنس،آئین کے مطابق اقدام کرتے ہیں، ایوان ِ صدر کی وضاحت

ججز کیخلاف ریفرنس،آئین کے مطابق اقدام کرتے ہیں، ایوان ِ صدر کی وضاحت

اسلام آباد ( کلک نیوز) ایوانِ صدر کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں دی نیوز میں 31؍ مئی 2019ء کو انصار عباسی کی بائی لائن کے ساتھ شائع ہونے والی خبر، جس میں صدر مملکت کے حوالے سے بات کی گئی ہے، کو ناقص قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ خبر میں میرٹ نہیں ہے۔ صدر سیکریٹریٹ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ صدر مملکت ملک کے آئین کے مطابق اقدام کرتے ہیں۔ اس حوالے سے انصار عباسی کا کہنا ہے کہ اس خبر کی بنیاد دو وفاقی وزیروں کے ساتھ پس منظر میں ہونے والی بات چیت ہے۔ ان میں سے ایک وزیر نے واضح طور پر کہا تھا کہ صدر مملکت ریفرنس میں استعمال کی گئی زبان سے ناخوش تھے اسلئے اس میں تبدیلی کرائی۔ وزیر نے یہ بھی کہا کہ اس ریفرنس کے پیچھے وزیر قانون فروغ نسیم تھے۔ اس نمائندے نے خبر فائل کرنے سے قبل جمعرات کو فروغ نسیم سے رابطہ کرکے ان کا موقف معلوم کرنے کی کوشش کی تھی لیکن انہوں نے فون نہیں اٹھایا۔ علاوہ ازیں، دی نیوز نے میڈیا رپورٹ (28؍ مئی کے ایکسپریس ٹریبیون) کا حوالہ دیا جس میں بتایا گیا تھا کہ ریفرنس وزارت میں تیار کیا گیا تھا اور ریفرنس دائر کرنے کیلئے 3؍ نومبر 2007ء کو پی سی او کے تحت حلف اٹھانے والے سپریم کورٹ کے سابق جج کی خدمات حاصل کی گئی تھیں۔ ایک وزارتی ذریعے سے جب جمعہ کو رابطہ کیا اور انہیں وضاحت کے متعلق بتایا تو وہ مسکرا دیے اور کہا کہ صحافی کو اپنے ذریعے پر بھروسہ کرنا چاہئے۔

About clicknewslive

Check Also

: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ میں افغان طالبان کے جھنڈے لانے والے کارکنان کو گرفتار کر لیا گیا ہے

اسلام آباد کلک رپورٹر سے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے …

Leave a Reply

کلک نیوز سے واٹس ایپ پر رابطہ کریں