Home / ہمارا شہر / اسلام آباد / ایف بی آر کا آئندہ بجٹ میں 25 مختلف ودہولڈنگ ٹیکسز ختم کرنیکا فیصلہ

ایف بی آر کا آئندہ بجٹ میں 25 مختلف ودہولڈنگ ٹیکسز ختم کرنیکا فیصلہ

اسلام آباد(ارشدعلی سے)ایف بی آر نے آئندہ بجٹ میں 25مختلف ودہولڈنگ ٹیکسز ختم کرنیکا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ 7سے10ودہولڈنگ ٹیکسز ہی مجموعی ٹیکسز کا 85فیصد ہے‘فیصلہ کاروبار میں آسانی کے لیے ہے۔تفصیلات کے مطابق،ایف بی آر نے آئندہ بجٹ 2019-20میں 25مختلف ودہولڈنگ ٹیکسز ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ایف بی آر کے باوثوق ذرائع نے بدھ کے روز دی نیوز کو بتایا ہے کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو ودہولڈنگ ٹیکسز میں 50فیصد تک کمی کرنے پر غور کررہی ہےاورآئندہ بجٹ میں اس کی تعداد 50سے کم کرکے 25کرنا چاہتی ہے۔سرکاری اعداد و شمار سے واضح ہوتا ہے کہ کچھ ودہولڈنگ ٹیکسز ایسے ہیں ، جہاں ایف بی آر نے کوئی ٹیکس جمع نہیں کیا ہے۔ایف بی آر اب تک سیکشن 236 Vکے تحت معدنیات نکالنے پر کوئی پیشگی ٹیکس جمع نہیں کرسکا ہے۔سیکشن 236 Tکے تحت پاکستان مرکنٹائل ایکسچینج لمیٹڈ سے 12لاکھ 30ہزار روپے جمع کیے گئے۔جب کہ انکم ٹیکس آرڈیننس 2001 کے سیکشن 236 Eکے تحت رواں مالی سال کے دوران غیر ملکی ٹی وی ڈراموں اور سیریلز کے ذریعے 2لاکھ

40ہزارروپے وصول کیے گئے۔ایف بی آر کو اس بات کا علم ہوا ہے کہ مجموعی 50ودہولڈنگ ٹیکسز میں سے 7سے10ودہولڈنگ ٹیکسز ہی مجموعی جمع کیے گئے ٹیکسز کا 85فیصد ہے۔ایف بی آر نے اب تک رواں مالی سال کے دوران ودہولڈنگ ٹیکسز کی صورت میں 800ارب روپے جمع کیے ہیں اور ایف بی آر موجودہ ودہولڈنگ ٹیکسز میں سے 50فیصد کم کرنے پر سوچ بچار کررہا ہےتاکہ پاکستان میں کاروبار کرنے میں آسانی ہوسکے۔ایف بی آر کے اعلیٰ عہدیدار نے دی نیوز کو اس بات کی تصدیق کی ہے کہ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ ودہولڈنگ ٹیکسز کے اہم ماخذات کو آئندہ بجٹ میں برقرار رکھے گی اور وہ تمام ودہولڈنگ ٹیکسز بھی جاری رہیں گے جنہیں معیشت کے دستاویز کے آلے کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔ایف بی آر کے کیے گئے تجزیے سے ظاہر ہوتا ہے کہ ایف بی آر ودہولڈنگ ٹیکسز کا بڑا حصہ درآمدات ، تنخواہوں، غیر رہائشی کی ادائیگی ، اشیا ،سروسزاور کانٹریکٹس کے لیے ادائیگی،برآمدات، بجلی صارفین، جائداد سے آمدنی، بینکوں سے نقدی نکلوانا، غیر منقولہ جائدادوں کی خرید اری/ٹرانسفر وغیرہ۔درآمدات پر ایف بی آر نے رواں مالی سال کے دوران جولائی 2018سے مئی 2019کے وسط تک 200ارب روپے جمع کیے ہیں۔تنخواہوں کے حوالے سے ودہولڈنگ جمع کرنے میں رواں مالی سال کے دوران کمی واقع ہوئی ہے کیوں کہ ن لیگ کی حکومت نے قابل ٹیکس تنخواہ کا دائرہ وسیع کردیا تھا، جس کی وجہ سے رواں مالی سال کے دوران اس مد میں ٹیکس جمع کرنے میں 45فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔ودہولڈنگ ٹیکس کے حوالے سے قرضوں میں منافع رواں مالی سال کے دوران بڑھ کر 50ارب روپے تک پہنچ گیا ہے ، جب کہ گزشتہ مالی سال کے دوران اسی مدت میں یہ 38ارب روپے تھا۔غیر رہائشیوں کو ادائیگی کی مد میں ودہولڈنگ ٹیکسز 80فیصد بڑھ کر 29ارب روپے تک پہنچ گئے ہیں۔اشیا، سروسز اور کانٹریکٹس کی ادائیگیوں کی مد میں ودہولڈنگ ٹیکسز 185ارب روپے رواں مالی سال کے دوران جمع کیے جاچکے ہیں ، جب کہ گزشتہ مالی سال کے دوران اسی مدت میں 215ارب روپے جمع کیے گئے تھے۔پراپرٹی سے آمدنی بڑھ کر 18ارب روپے ہوگئی، انعامات کی مد میں 12ارب روپے، پی او ایل مصنوعات کی فروخت کی مد میں 7ارب روپے، بینکوں سے نقدی نکالنے پر 26ارب روپے، بجلی کے استعمال(صنعتی اور کمرشل)اور غیر منقولہ جائدادوں کی خریداری اور ٹرانسفر پر 11اعشاریہ4ارب روپے حاصل کیے گئے۔

About clicknewslive

Check Also

: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ میں افغان طالبان کے جھنڈے لانے والے کارکنان کو گرفتار کر لیا گیا ہے

اسلام آباد کلک رپورٹر سے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے …

Leave a Reply

کلک نیوز سے واٹس ایپ پر رابطہ کریں