Home / اہم خبریں / آزادیٔ اظہار کے لیے ’روبوٹ رپورٹر‘ تیار

آزادیٔ اظہار کے لیے ’روبوٹ رپورٹر‘ تیار

دنیا بھر میں آزادیٔ اظہار پر پابندی کا شکار ملکوں کے میڈیا کے لیے ماڈل کے طور پر ’روبوٹ رپورٹر‘ تیار کر لیا گیا ہے۔

جرمنی کے شہر بون میں جاری گلوبل میڈیا فورم 2019 میں روبوٹ کو رپورٹر ’صوفیہ‘ کے نام سے پیش کیا گیا جس نے بطور مندوب کانفرنس میں شرکت کرکے اینکر کو 10 منٹ کا ویڈیو انٹرویو بھی دیا اور سب کو حیران کردیا۔

گلوبل میڈیا فورم میں مصنوعی ذہانت کے نئے دور کی نمائندہ ’صوفیہ‘ (روبوٹ) نے فورم میں آرٹیفیشنل انٹیلیجنس کے مستقبل کے حوالے سے کئے گئے سوالات کے شاندار جوابات دیئے۔

دورِحاظر میں دنیا بھر میڈیا کو درپیش چیلنجز کے حوالے سے ’صوفیہ‘ نے حقائق کے عین مطابق اور انتہائی تلخ جوابات دیئے۔ میڈیا کو مشکلات کے سبب مستقبل میں بطور میڈیا پرسن روبوٹ کے استعمال پر بھی ’صوفیہ‘ کی گفتگو دلچسپ رہی۔

صوفیہ نے فورم کے پہلے دن کی کارروائی دیکھی، مندوبین ’صوفیہ‘ کے ساتھ تصویریں اور سلفیاں بناتے رہے۔

سلفیاں بنانے والوں کے متوجہ کرنے پر ’صوفیہ‘ عام انسان کی طرح چہرے پر مختلف ردعمل کا اظہار کرتی رہی، صوفیہ کے حس مزاح سے مندوبین لطف اندوز ہوئے۔

اس قابل دید سیشن مندوبین نے آئی ٹی انجینئرز کو خود داد دی۔

About clicknewslive

Check Also

: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ میں افغان طالبان کے جھنڈے لانے والے کارکنان کو گرفتار کر لیا گیا ہے

اسلام آباد کلک رپورٹر سے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے …

Leave a Reply

کلک نیوز سے واٹس ایپ پر رابطہ کریں