Home / اہم خبریں / آڈیو ویڈیو کا فارنزک ٹیسٹ ہو، بڑی بینفشری اپوزیشن،فردوس عاشق

آڈیو ویڈیو کا فارنزک ٹیسٹ ہو، بڑی بینفشری اپوزیشن،فردوس عاشق

کراچی( کلک نیوز)وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ چیئرمین نیب کی مبینہ آڈیو ویڈیو کا فارنزک معائنہ ہونا چاہئے، یہ پتا چلنا چاہئے کہ اس ویڈیو کو بنانے والا گینگ کس کے ہاتھوں میں کھیل رہا ہے،چیئرمین نیب متنازع ہوتے ہیں تو بڑی بینفشری اپوزیشن ہوگی،آہ و بکا کا مقصد نیب کو متنازع کرنا ہے ، سوشل میڈیا لوگوں کی پگڑیاں اُچھالنے کا باعث بنا ہوا ہے ۔ وہ نجی ٹی وی کے پروگرام ”نیا پاکستان شہزاد اقبال کے ساتھ“ میں میزبان شہزاد اقبال سے گفتگو کررہی تھیں ۔ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پا ک بھارت تنازعات کے پرامن حل کیلئے مذاکرات کے علاوہ کوئی راستہ نہیں بھارت کے ساتھ تمام ایشوز پر بات کرنا چاہیں گے، مذاکرات میں بھارت کی ترجیح تجارت جبکہ کشمیر ہماری ترجیح ہوگی۔ن لیگ کے رہنما محمد احمد خان نے کہا کہ چیئرمین نیب کہتے ہیں کہ کسی کیخلاف کیسز ہیں تو اسے عہدہ پر فائز نہیں رہنا چاہئے، اب چیئرمین نیب کیخلاف الزامات ہیں تو وہ اپنے عہدے پر کیسے فائز رہ سکتےہیں۔وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چیئرمین نیب متنازع ہوتے ہیں تو بڑی بینفشری اپوزیشن ہوگی، نیب اپوزیشن قیادت کے کرپشن سے بنائے گئے اثاثوں، منی لانڈرنگ اور جعلی بینک اکاؤنٹس سے متعلق عدالتوں کو آگاہ کررہا ہے، ن لیگ حکومت، نیب اور عدالتوں کو دباؤ میں لانے میں ناکام ہوگئی تو شہباز شریف خودساختہ مفرور ہوگئے، اپوزیشن چیئرمین نیب کو متنازع بنا نے میں کامیاب ہوگئی تو اس کا فائدہ ن لیگ اور اپوزیشن کو ہوگا۔ فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ چیئرمین نیب کی مبینہ آڈیو ویڈیو کا فارنزک معائنہ ہونا چاہئے، یہ پتا چلنا چاہئے کہ اس ویڈیو کو بنانے والا گینگ کس کے ہاتھوں میں کھیل رہا ہے، چیئرمین نیب پر الزام لگانے والے گینگ کو رانا ثناء اللہ بھی گناہ گار قرار دے چکے ہیں، تحقیقات ہونی چاہئے کہ اس گینگ نے خود کو بچانے کیلئے چیئرمین نیب کیخلاف یہ ہتھکنڈا استعمال کیا یا اس کے پیچھے اپوزیشن ہے، حکومت کو کہیں چیلنج نہیں تھا کہ چیئرمین نیب کو متنازع بناتی۔ فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ طاہر اے خان کو وزیراعظم کے دوست کے طور پر پیش کیا جارہا ہے، وہ اپوزیشن رہنماؤں سے بھی ملتے رہتے ہیں، میڈیا کے اسٹیک ہولڈرز میں سے ایک ہیں، الیکشن سے پہلے طاہر اے خان نے پی ٹی آئی کی میڈیا اسٹریٹجی بنانے میں مدد کی، طاہر اے خان مشیر نہیں تھے البتہ مشاورت میں ضرورت ہوتی تو انہیں انگیج کیا جاتا تھا، کوئی ایسا شخص جو ریاست کے ادارے کی عزت کے ساتھ کھیلتا ہے چاہے وہ وزیراعظم کا دوست کیوں نہ ہو اسے وزیراعظم ہاؤس میں داخل نہیں ہونے دیا جاسکتا ہے، وزیراعظم کا قریبی کوئی شخص غیرذمہ داری کا مظاہرہ کرتا ہے اسے اس کے انفرادی عمل کی سزا ملنی چاہئے اپوزیشن کی آہ و بکا کا مقصد نیب کو متنازع کرنا ہے، سوشل میڈیا لوگوں کی پگڑیاں اچھالنے کا باعث بنا ہوا ہے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پا ک بھارت تنازعات کے پرامن حل کیلئے مذاکرات کے علاوہ کوئی راستہ نہیں ہے، مودی نے الیکشن میں کامیابی حاصل کرنے کیلئے قوم پرستی کو ابھارا اور پاکستان مخالف نعروں پر انحصار کیا، مودی مقبوضہ کشمیر میں تیزی سے بگڑتے حالات سے واقف ہیں،اس وقت سب سے سلگتا ہوا مسئلہ کشمیر ہے، بھارت کے ساتھ تمام ایشوز پر بات کرنا چاہیں گے، مذاکرات میں بھارت کی ترجیح تجارت جبکہ کشمیر ہماری ترجیح ہوگی۔ن لیگ کے رہنما محمد احمد خان نے کہا کہ ن لیگ میں ایک ہی بیانیہ ہے جو نواز شریف کا ہے، شہباز شریف بھی اسی بیانیہ کی حمایت کرتے ہیں، پارٹی میری رائے نہیں مانتی تو میں پارٹی کی رائے کے ساتھ ہوں گا، چیئرمین نیب نے ن لیگ کے صدر کیخلاف جو بات کی اس پر مجھے ہتک عزت کا دعویٰ دائر کرنا چاہئے، پارٹی چیئرمین نیب کے انٹرویو پر ہتک عزت کا دعویٰ کرنے سے اختلاف نہیں رکھتی پارٹی کو ان کے استعفے کے مطالبہ سے اختلاف ہے، چیئرمین نیب کو ہٹانے کا کوئی اور طریقہ کار نہیں ہے اس لئے ان سے استعفے کا مطالبہ کیا ہے۔

About clicknewslive

Check Also

: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ میں افغان طالبان کے جھنڈے لانے والے کارکنان کو گرفتار کر لیا گیا ہے

اسلام آباد کلک رپورٹر سے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے …

Leave a Reply

کلک نیوز سے واٹس ایپ پر رابطہ کریں